جمعرات، 13 دسمبر، 2007

چین میں‌ لینکس مارکیٹ

ارسال کردہ از Muhammad Shakir Aziz بوقت 1:36 AM ,
چین میں 2003 سے 2006 کے دوران لینکس کی مارکیٹ بیس ملین ڈالر کے حساب سے بڑھی ہے۔ اگر اعدادوشمار کو دیکھا جائے تو لینکس ڈیکسٹاپ سافٹویر کی مارکیٹ سولہ فیصد سے بارہ فیصد پر آچکی ہے۔ لیکن سی سڈ کنسلٹنگ کے مطابق اس سال کی تیسری سہ ماہی میں لینکس ڈیسکٹاپ سافٹویر کی فروخت 25.1 فیصد بڑھی ہے۔
چینی حکومت کی سافٹویر قذاقی کے خلاف مہم نے اس سلسلے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ حکومت نے اس سلسلے میں دو قانون پاس کیے تھے جن کے مطابق حکومتی ادارے اور مقامی حکومتیں چوری شدہ ملکیتی سافٹویرز کی جگہ اب کم قیمت لینکس سافٹویر استعمال کررہی ہیں۔ حکومت نے کم قیمت لینکس ڈیسکٹاپ پر اپنا خرچ بھی بڑھا دیا ہے۔ پچھلے سال یہ مہم صرف بڑے شہروں اور وہاں کی مقامی حکومتوں تک محدود تھی لیکن اب یہ گاؤں اور قصبوں تک پھیل گئی ہے۔ اس وقت حکومت لینکس سافٹویر مارکیٹ کے ایک چوتھائی کی خریدار ہے جس میں سب سے زیادہ حصہ چین کے اپنے بنائے گئے ریڈ فلیگ لینکس کا ہے۔
انڈسٹری کے صارفین جیسے ہوٹل، لاٹری سیلر اور ٹیلی مواصلاتی کمپنیوں نے بھی اس سال لینکس ڈیسکٹاپ کے سلسلے میں اپنے فنڈز کو بڑھا دیا ہے۔سی سی ڈبلیو ریسرچ کے مطابق چین کی ہوٹل انڈسٹری کے آنلائن کاروبار نے اس سال 30 فیصد سے زیادہ ترقی کی ہے جس نے یہاں کمپیوٹرز اور سستے لینکس سافٹویرز کی کھپت کو بڑھا دیا ہے۔
چین میں اکثر کمپیوٹرز لینکس کی تنصیب کے ساتھ فروخت کئے جارہے ہیں جن کی وجہ سے لینکس کا مارکیٹ میں حصہ مزید بڑھ جائے گا۔ لیکن اس سارے عمل کا تاریک پہلو یہ بھی ہے کہ صارفین کمپیوٹر خریدنے کے بعد لینکس کو اڑا کر ونڈوز کا چوری شدہ ورژن نصب کرلیتے ہیں۔ کمپیوٹر فروخت کرنے والے بھی صارفین کو لینکس اڑا کر ونڈوز کا چوری شدہ ورژن انسٹال کردیتے ہیں۔ دوسری طرف مائیکروسافٹ نے بھی ونڈوز کی قمیتیں چین میں بہت کم کردی ہیں جو قریبًا لینکس کمپنیوں کی سروس فیس کے برابر ہیں۔ چناچہ لوگ ونڈوز کو استعمال کرنا زیادہ پسند کررہے ہیں۔ تاہم یہ لینکس کی فتح ہے کہ مائیکروسافٹ کو اپنی پراڈکٹس کی قمیتیں کم کرنا پڑی ہیں۔

Back Top

0 تبصرے:

ایک تبصرہ شائع کریں

براہ کرم تبصرہ اردو میں لکھیں۔
ناشائستہ، ذاتیات کو نشانہ بنانیوالے اور اخلاق سے گرے ہوئے تبصرے حذف کر دئیے جائیں گے۔