جمعرات، 14 فروری، 2008

پھولوں کا کوئی موسم نہیں ہوتا

ارسال کردہ از Muhammad Shakir Aziz بوقت 4:15 AM ,
لال گلابی نیلے پھولے

اودے رنگ رنگیلے پھول

پھولوں کا کوئی موسم نہیں ہوتا

ان چھوئے ان کہے

کلیوں جیسے کورے جذبے

جذبوں کا کوئی موسم نہیں ہوتا

محبتوں کو قید کرتے ہو

محبتوں کا کوئی موسم نہیں ہوتا


یہ پھول ان سب کے نام جن سے میں محبت کرتا ہوں۔ میرے دوست، میرے عزیز، میرے اساتذہ، میرے ماں باپ، میرے بہن بھائی اور وہ سب جنھیں میں دل سے بہت قریب محسوس کرتا ہوں۔ یہ پھول ان کے لیے میری محبتوں کا اظہار ہیں۔
یہ پھول اس شخص کی خدمت میں خراج تحسین ہیں جسے دنیا افتخار محمد چوہدری کے نام سے جانتی ہے۔ نیلسن منڈیلا کو چھ سال قید میں رکھا گیا تھا ہم دس سال کے لیے بھی تیار ہیں۔ چیف جسٹس آپ جب بھی آزاد ہونگے ہم آپ کا استقبال ایسے ہی کریں گے۔ وطن پر بے یقینی کی فضائیں ہیں تو کیا ہوا، وطن پر ناامیدی کی پرچھائیں ہیں تو کیا ہوا ہم پرعزم ہیں ، ہم پرامید ہیں روشن کل کے لیے ۔۔۔۔ ہم منتظر ہیں اس روشن اجالے کے جو ظلمتوں کو مٹا دے گا اور اس ارض پاک کو نئی رفعت و بلندی عطاء کرے گا۔
اے اللہ میرے وطن کی حفاظت کرنا۔

Back Top

4 تبصرے:

  1. نیلسن مینڈیلا 6 نہیں 27 سال قید رہا تھا۔

  2. 6 سال قید تنہائی تھی۔ ویسے وہ 27 سال اندر رہا تھا۔
    ویسے ایک بات ہے۔ قید افتخار چودہری نے رہنا ہے۔ دس کا اعلان آپ کر رہے ہیں

  3. زکریا تصحیح کا شکریہ۔ 6 سال جاوید چوہدری کے کالم سے پڑھا تھا۔
    انتظار بطور ایک عام شہری کے کہا گیا ہے۔ قید میں تو اسے بلاشک رہنا ہے لیکن لکھاری کی مراد اس سے یہ تھی کہ عوام چیف جسٹس کو بھولیں گے نہیں جیسی کہ ہماری عادت ہے۔

  4. جاوید چوہدری جو بھی لکھتا رہے اگر یہ جذبہ آپ کا ہے تو اللہ آپ کو ثابت قدم کرے
    اور
    میرا پیغام ہے محبت جہاں تک پہنچے
    یہ ہمارے دین کا اول پیغام ہے ۔ اسلام کا مطلب ہی سلامتی ہے اور سلامتی بغیر محبت کے ممکن نہیں ۔ کاش اپنے آپ کو مسلمان کہنے والے اپنے دین کا بھی اسی طرح مطالعہ کریں جس طرح سائینس کا کرتے ہیں ۔ قوم کی ترقی کیلئے حدود و قیود ہونا ضروری ہوتی ہیں لیکن دین کی حدود وقیود لوگوں کو نہیں بھاتیں ۔

ایک تبصرہ شائع کریں

براہ کرم تبصرہ اردو میں لکھیں۔
ناشائستہ، ذاتیات کو نشانہ بنانیوالے اور اخلاق سے گرے ہوئے تبصرے حذف کر دئیے جائیں گے۔